Sad Urdu Poetry To Express Sad Feelings

There is a best way in form of Sad Urdu Poetry to reveal and show your sad thoughts, sad feelings and sad emotions to your beloved one’s and others. Sad Urdu Poetry is a well known and great term in poetry in urdu language.

Collection of best Sad Urdu Poetry

A very nice collection of sad urdu poetry is given below

“Tu Manay Mujhe de de k dalelen Shab bhar”

Tu Manay Mujhe de de k dalelen Shab bhar
Aj Dil karta hai be bat khafa hu jaun

تو منائے مجھے دے دے کے دلیلیں شب بھر
آج دل کرتا ہے بے بات خفا ہو جاؤں

صدیوں بعد اُسے پھر دیکھا، دل نے پھر محسوس کیا

صدیوں بعد اُسے پھر دیکھا، دل نے پھر محسوس کیا
اور بھی گہری چوٹ لگی ہے، درد میں شدّت اور بھی ہے
میری بھیگتی پلکوں پر جب اُس نے دونوں ہاتھ رکھے
پھر یہ بھید کھُلا اِن اشکوں کی کچھ قیمت اور بھی ہے
اُس کو گنوا کر محسنؔ اُس کے درد کا قرض چکانا ہے
ایک اذّیت ماند پڑی ہے ایک اذّیت اور بھی ہے

Sad urdu Poetry

ﮐﻮﺋﯽ ﮐﯿﺴﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﭘﮍﮬﮯ، ﺳﻤﺠﮭﮯ

ﮐﻮﺋﯽ ﮐﯿﺴﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﭘﮍﮬﮯ، ﺳﻤﺠﮭﮯ
ﻣﯿﮟ ﮐِﺴﯽ ﺍﻭﺭ ﮨﯽ ﺯﺑﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﮨﻮﮞ

میرا ہمسفر جو عجِیب ہے

میرا ہمسفر جو عجِیب ہے تو عجِیب تر ہُوں مَیں آپ بھی
مُجھے منزِلوں کی خبر نہیں، اُسے راستوں کا پتہ نہیں

دیدہء تر پہ وہاں کون نظر کرتا ہے

دیدہء تر پہ وہاں کون نظر کرتا ہے
کاسہء چشم میں خوں نابِ جگر لے کے چلو
اب اگر جاؤ پئے عرض و طلب اُن کے حضور
دست و کشکول نہیں کاسہء سر لے کے چلو

ترکِ محبت کر بیٹھے ہم، ضبط محبت اور بھی ہے

ترکِ محبت کر بیٹھے ہم، ضبط محبت اور بھی ہے
ایک قیامت بیت چکی ہے، ایک قیامت اور بھی ہے
ہم نے اُسی کے درد سے اپنے سانس کا رشتہ جوڑ لیا
ورنہ شہر میں زندہ رہنے کی اِک صورت اور بھی ہے
ڈوبتا سوُرج دیکھ کے خوش ہو رہنا کس کو راس آیا
دن کا دکھ سہہ جانے والو، رات کی وحشت اور بھی ہے
صرف رتوں کے ساتھ بدلتے رہنے پر موقوف نہیں
اُس میں بچوں جیسی ضِد کرنے کی عادت اور بھی ہے

Sad urdu Poetry

ﺗﯿﺮﮮ ﻗﺮﺏ ﻣﯿﮟ ﺟﯿﻨﮯ ﮐﮯ ﺯﻣﺎﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ

ﺗﯿﺮﮮ ﻗﺮﺏ ﻣﯿﮟ ﺟﯿﻨﮯ ﮐﮯ ﺯﻣﺎﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﺳﺐ ﺑﺪﻝ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ ﭘﻞ ﻭﮦ ﺳﮩﺎﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﻣﻼﻗﺎﺕ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﯽ ﻟﺐ _ ﺭﺳﺘﮧ ﺳﺮ ﻣﺤﻔﻞ
ﻣﻠﻨﮯ ﮐﮯ ﺣﺴﯿﮟ ﺍﺏ ﻭﮦ ﺑﮩﺎﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﺑﺎﻧﺪﮪ ﺭﮐﮭﺎ ﺗﮭﺎ ﺗﺠﮭﮯ ﺩﮬﮍﮐﻦ ﮐﯽ ﮈﻭﺭ ﺳﮯ
ﺍﺏ ﺗﺠﮫ ﭘﮧ ﻭﺍﺭﻧﮯ ﮐﻮ ﻭﮦ ﻧﻈﺮﺍﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﺗﻌﺮﯾﻒ ﮐﺮﺗﮯ ﺗﮭﮯ ﻏﺰﻟﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺗﺮﯼ ﮨﻢ
ﺍﺏ ﮔﻦ ﮔﻨﺎﻧﮯ ﮐﻮ ﻭﮦ ﺗﺮﺍﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﭘﺮﻭﺭﺵ ﮐﺮﺗﮯ ﺗﮭﮯ ﺟﻮ ﺍﻭﻻﺩ ﮐﯽ ﮐﺒﮭﯽ
ﺗﺮﺑﯿﺖ ﮐﮯ ﺍﺏ ﻭﮦ ﮔﮭﺮﺍﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﺯﻭﮨﯿﺐ ﺗﺠﮭﮯ ﻋﺸﻖ ﻧﮯ ﺑﺮﺑﺎﺩ ﮐﺮ ﺩﯾﺎ
ﭼﮩﺮﮦ ﺍﺩﺍﺱ ﮨﮯ ﻭﮦ ﻣﺴﮑﺮﺍﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﮯ
ﺯﻭﮨﯿﺐ ﺍﺭﺷﺪ

جس کو لينے تاجروں کا دستہ نکلا

جس کو لينے تاجروں کا دستہ نکلا
بکنے آيا تو تَوَقُّع سے بھي سستا نکلا
اپنے سينے ميں چھپائے ہوئے تيري ياديں
ہم پے ہر شخص آوازيں کستا نکلا
ہم نے ہر بات بہت سوچ سمجھ کر کي ہے
بس اک لفظ محبت تھا جو برجستہ نکلا
وہ جس نے پاؤں تلے کتنے دل مسل ڈالے
کل وہي شخص محبت کو ترستا نکلا
تيري مسکان سے منسوب رہي راحت ميري
ميرا ہر غم تيرے غم سے پيوستہ نکلا

اگر چاہو تو آنا کچھ نہیں دشوار ، آ نکلو

اگر چاہو تو آنا کچھ نہیں دشوار ، آ نکلو
شروعِ شب کی محفل ہے مری سرکار ! آ نکلو
تمہیں معلوم ہے ہم تو نہ آنے کے ، نہ جانے کے
تڑپتا ہے تمہیں جی دیکھنے کو یار ، آ نکلو
بھروسہ ہی نہیں تم کو کسی پر اور یہاں سب ہیں
تمہارے ساتھ آنے کے لئے تیار ، آ نکلو
خرابے میں ، سرِ شامِ تمنا ، اے شہِ خوباں
لگا خانہ خرابوں کا ہے اک دربار ، آ نکلو
جو آنکھیں ہو گئیں محروم راتوں میں بھی خوابوں سے
ہیں دن میں بھی وہ خوابوں ہی کی جانبدار ، آ نکلو
تمہاری نرگسِ بیمار ہی کے آسرے پر ہیں
تمہاری نرگسِ بیمار کے بیمار ، آ نکلو
ہماری کیا خریداری کہ یکسر تن فگاری ہیں
زلیخاوار کیا آؤ گے ، شیریں وار ، آ نکلو
تمہیں ہم سے مِلے گا کیا مگر ہم پھر تمہارے ہیں
ہماری قدر جانو اور یونہی بیکار ، آ نکلو
اگر پوشیدہ رہنا مخبروں سے ہے تو پھر یارو
ہماری مصلحت مانو ، سرِ بازار ، آ نکلو
جون ایلیا

One Reply to “Sad Urdu Poetry To Express Sad Feelings”

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *