Advertisement

Good way to tell others about your thoughts and feelings for them is Poetry In Urdu. Urdu Poetry is right channel to please others and tell them that what you think about them in your local Poetry in Urdu language. I’ve collected a good choice of poetry in urdu for you.

Best Poetry in Urdu for Your Beloved Ones

A best collection of poetry in urdu is given below

اگر ہے موت میں کچھ لطف بس تو اتنا ہے

اگر ہے موت میں کچھ لطف بس تو اتنا ہے

کہ اس کے بعد خدا کا سراغ پائیں گئے ہم

احمد ندیم قاسمی

مدتوں سے مسکرا کر نہیں دیکھا

مدتوں سے مسکرا کر نہیں دیکھا
لگتا ہے، لب بھول گئے پہچان اپنی

میں اس حادثے کا چشم دید گواه هوں

میں اس حادثے کا چشم دید گواه هوں
جس میں میرے هی دل کی دنیا تباه هو گئ

شرارت کے صحیفے کا ، غَضب کردار ہے لیلیٰ

شرارت کے صحیفے کا ، غَضب کردار ہے لیلیٰ
’’نرے‘‘ شمشیر زَن! ، معصومیت کا وار ہے لیلیٰ

یہ جب لہرا کے چلتی ہے تو کلیاں رَقص کرتی ہیں
غُرورِ حُسن کے جبروت کا اِظہار ہے لیلیٰ

گھٹا ، گیسو ، دَھنک ، اَبرُو ، گُہر ، آنسو ، کلی ، خوشبو
حیا کی پاک جمنا ، رُوح کا سنسار ہے لیلیٰ

ہنسے رِم جھِم ، چلے چھم چھم ، کہے ہر دَم ، سنے کم کم
سُروں کی راجدھانی ، جھرنوں کی جھنکار ہے لیلیٰ

کوئی ’’بھنورا‘‘ گیا خوشبو چُرانے ، ہوش کھو بیٹھا
کہے ، میں گُل سمجھتا تھا مگر گُل زار ہے لیلیٰ

چھری خربوزے پہ گرنے کی ضربُ المثل دے بیٹھا
چھری خود کو سمجھ کر لڑنے کو تیار ہے لیلیٰ

حلف شمع اُٹھاتی ہے ، طوافِ لیلوی کر کے
پتنگوں کے فنا ہونے میں حصے دار ہے لیلیٰ

جھلک پوری دِکھا دے ، تو سبھی دیوانے مر جائیں
خُدا خوفی کے جذبے سے ، بہت سرشار ہے لیلیٰ

خبر ہے اِس کو دیوانہ ، خرد کو کھو بھی سکتا ہے
سَرِ بازار ملتی ہے ، بہت ہُشیار ہے لیلیٰ

صبا کُوئے وَفا سے ، قیس کا پیغام نہ لائی
یہ تتلی ’’سب‘‘ سمجھتی ہے ، کہ کیوں بیمار ہے لیلیٰ

poetry in urdu pictures

مجھے تب بھی محبت تھی

مجھے تب بھی محبت تھی

مجھے اب بھی محبت ہے

تیرے قدموں کی آہٹ سے

تیری ہر مسکراہٹ سے

تیری باتوں کی خوشبو سے

تیری آنکھوں کے جادو سے

تیری دلکش اداؤں سے

تیری قاتل جفاؤں سے

مجھے تب بھی محبت تھی

مجھے اب بھی محبت ہے

تیری راہوں میںرکنے سے

تیری پلکوں کے جھکنے سے

تیری بے جا شکایت سے

تیری ہر ایک عادت سے

مجھے تب بھی محبت تھی

مجھے اب بھی محبت ہے

کافرہوں، سر پھرا ہوں مجھے ماردیجیے

کافرہوں، سر پھرا ہوں مجھے ماردیجیے
میں سوچنے لگا ہوں مجھے مار د یجیے

ہے احترام ِحضرت ِانسان میرا دین
بے دین ہو گیا ہوں مجھے مار دیجیے

میں پوچھنے لگا ہوں سبب اپنےقتل کا
میں حد سے بڑھ گیا ہوں مجھے مار دیجیے

کرتا ہوں اہل جبہ ودستار سے سوال
گستاخ ہوگیا ہوں مجھے مار دیجیے

خوشبو سے میرا ربط ہے جگنو سے میرا کام
کتنا بھٹک گیا ہوں مجھے مار دیجیے

معلوم ہے مجھے کہ بڑا جرم ہے یہ کام
میں خواب دیکھتا ہوں مجھے مار دیجیے

زاہد یہ زہدو تقویٰ و پرہیز کی روش
میں خوب جانتا ہوں مجھے ماردیجیے

بے دین ہوں مگر ہیں زمانے میں جیتنے دین
میں سب کو مانتا ہوں مجھے مار دیجیے

پھر اس کے بعد شہر میں ناچے گا ہُو کا شور
میں آخری صدا ہوں مجھے مار دیجیے

میں ٹھیک سوچتا ہوں، کوئی حد میرے لیے
میں صاف دیکھتا ہوں،مجھے مار دیجیے

یہ ظلم ہے کہ ظلم کو کہتا ہوں صاف ظلم
کیا ظلم کر رہا ہوں مجھے مار دیجیے

میں عشق ہوں،میں امن ہوں میں علم ہوں میں خواب
اک درد لادوا ہوں مجھے مار دیجیے

زندہ رہا تو کرتا رہوں گا ہمیشہ پیار
میں صاف کہہ رہا ہوں مجھے مار دیجیے

جو زخم بانٹتے ہیں انہیں زیست پہ ہے حق
میں پھول بانٹا ہوں مجھے مار دیجیے

ہے امن شریعت تو محبت مرا جہاد
باغی بہت بڑا ہوں مجھے مار دیجیے

بارود کا نہیں مرا مسلک درود ہے
میں خیر مانگتا ہوں مجھے مار دیجیے

مجھے محسوس ہوتا ہے

مجھے اس زندگانی سے کوئی شکوہ نہیں لیکن
ذرا سی بے سکونی ہے
نجانے کیوں مرے دل میں
عجب اک خوف رہتا ہے
مجھے محسوس ہوتا ہے
کہ میرے دل کے دروازے پہ
تیری یاد کی دستک میں وہ شدت نہیں باقی
بہت سی خاص باتیں ہیں
جو مجھ کو عام لگتی ہیں
مرے دل میں انہیں سن کر کوئی طوفاں نہیں اُٹھتا

تری آنکھیں ترا چہرہ
تری آواز کی رم جھم
سبھی کچھ خواب لگتا ہے
مجھے محسوس ہوتا ہے
سنہری تتلیوں جیسے
وہ سب خوش رنگ سے سپنے
مرے لفظوں کے پھولوں پر
بہت دن سے نہیں بیٹھے
مجھے محسوس ہوتا ہے
سمے کی تیز لہروں نے
ہمارے ریت کے کچے گھروندے توڑ ڈالے ہیں

مجھے اُن تیز لہروں سے
سنہری تتلیوں جیسے
سبھی خوش رنگ سپنوں سے
کوئی شکوہ نہیں لیکن
ذرا سی بے سکونی ہے

مجھے محسوس ہوتا ہے
تمہارے دل کے دروازے پہ میری یاد کی دستک
مری جاں اب نہیں ہوتی
مری جاں اب نہیں ہوتا
کہ میری یاد آئے تو
تمہاری آنکھ بھر آئے
دعائیں مانگتے لمحے
مجھے تم بھول جاتے ہو
مگر پھر مجھے تم سے
کوئی شکوہ نہیں لیکن
عجب سی بے سکونی ہے
عجب اک خوف ہے دل میں
میں تم کو بھول جاؤں گا

poetry in urdu

Advertisement
https://i1.wp.com/siyyahposh.com/wp-content/uploads/2016/08/poetry-in-urdu.jpg?fit=648%2C472https://i1.wp.com/siyyahposh.com/wp-content/uploads/2016/08/poetry-in-urdu.jpg?resize=150%2C150SiyyahPosh4 Line PoetryDua PoetryGhazal ShayariHeart Touching PoetryLove PoetryPoetryRomantic PoetryGood way to tell others about your thoughts and feelings for them is Poetry In Urdu. Urdu Poetry is right channel to please others and tell them that what you think about them in your local Poetry in Urdu language. I've collected a good choice of poetry in urdu...Your best source of Sad Urdu poetry

Comments

comments